Here is what others are reading about!

  • Home
  • /
  • Author: Fizzah Shah

مشرقی مرد

ٹھیک  سات  بجے  اسکی آنکھ کھل گئی ۔ وہ ہربڑا کر اٹھا کچھ  بھی  معمول کے مطابق نہیں تھا۔پھر اسکو خیال آیا کے آج  تو اتوار ہے  اس نے  جسم   کو  ڈھیلا   کیا  اور منہ  پے تکیہ رکھ کر پھر سو گیا۔   اب اسےدیر تک  سونا  تھا۔  یہ خیال کتنا  خوشگوار تھا۔۔۔ گھر میں اکیلا…

دھرتی ماں کی بپتا

کئی ورشوں  پہلے اس ویشال  دھرتی پر بہت سے لوگ آباد تھے جن کا دھرم الگ الگ تھامگر وہ سب ایک ہی پرجاتی کے تھے ۔ مانو جاتی ۔ انسان ۔ منوش ۔  اشرف مخلوق ۔ ایشور بھگوان۔ رام اور اللہ کی چنیدا مخلوق ۔۔ رگ وید  (برہما کی مقدس کتاب )میں لکھا ہے کے…

ابھی پاکستان بننا باقی ہے

اسکے سائیڈ ٹیبل پرایش ٹرے میں کچھ بجھے ہوئے سگریٹ پڑے تھے اورایک جل رہا تھا۔۔۔ ساتھ ہی کتابوں کا ایک ڈھیر لگاتھا جو یہ گواہی دے رہا تھا کے وہ خاصا بگڑا ہوا آدمی ہے۔۔۔ اس نے رعشہ زدہ ہاتھوں سے ا ایک  ڈائری اٹھائی۔۔۔  اس کے سر ورق پر مٹی جمی تھی۔ اس…

بُری عورت

زندگی سے بھر پور عورت دیکھی ہے ؟ہاں وہ قندیل تھی  جسکے ہر ہر زاویے سے روشنی پھوٹتی تھی   جو کسی فاسق مولوی کی طرح نفرت کے  فتوے نہیں دیتی تھی۔۔۔اس خطے  میں بغاوت  بھلے سبین محمود کی نوعیت کی ہو یا  قندیل  بلوچ کی۔۔۔ کاٹ دی جاتی ہے۔  میں بھلا کیسے کچھ لکھ سکتی…

کچی فصلیں

ان کچی فصلوں کے نام جنہیں پکنے سے پہلے کاٹ دیا گیا ۔۔ امڑ آج  مجھے بھی لے چلونا ۔ساتھ میں نے اس دن ضد کا ہر پینترا آزمایا کیونکہ میرےپاس اور کوئی چارہ نہیں تھا۔ میں نے وڈے شاہ جی کی سخاوت کے بارےمیں جو اتنا کچھ سن  رکھا تھا۔ وہ  زرینہ کو سنہری…

ہمارا سماج ایک ہیجڑا

اس نے تھوڑا سوچا۔ بہت زیادہ ہو جائیگا ڈرائیو نہیں کر سکوگے۔یہ سوچ کر وہ وسکی کو چومتے ہوئے بولا ،’’کل ملیں گے‘‘۔۔۔۔آ جا یار تجھے میں گھر چھوڑ دوں۔۔۔نہیں نہیں میں چلا جاؤں گا۔۔۔۔جانے کیا بات تھی اس میں ، حد کا ڈھیٹ پن ۔۔۔ بہت پیتا تھا لیکن پھر بھی ایسی باتیں کرتا…

اماوس کی رات

وہ  یونہی بے سود چلتاچلا جا رہا تھا۔ امجد ایک بے تکا سا آدمی تھا۔لکھاری تھا ،بے تکا تو ہونا ہی تھا۔وہ کوئی نامور لکھاری نہیں تھا۔ ایک عام سا کالم نگارہی تو تھا ۔فارغ لمحات میں زندگی کی حقیقت اور بعد از مرگ کے بارے میں سوچنےوالا ایک عام سا لکھاری۔ نہ تو اس…

Got It!

اس ویب سائٹ کا مواد بول پلاٹون کی آفیشل رائے کی عکاسی نہیں کرتا. مضامین میں ظاہر معلومات اور خیالات کی ذمہ داری مکمل طور پر اس کے مصنف کی ہے