Here is what others are reading about!

  • Home
  • /
  • Tag Archives:  خواب

غیرت مند معاشرے کی ایک جھلک

 “بڑا آیا مجھے مارنے والا” یه ایک نڈر بہن کا خیال تھا۔ بہن کے اس خیال کو غیرت مند بھائی نے گلا گھونٹ کر زمین کے چھ گز نیچے پہنچا کر حقیقت کا روپ دے دیا۔ بہت سن لیا که قندیل بری عورت تھی، بے حیا، بے باک، بدکردار، بد چلن ،بے غیرت،آوارہ مزاج اور…

خاموش سسکیوں کی کمائی

وہ زمانے کی گر م ہواؤں  سے اس قدر   خوش اسلو بی سے گلے ملتا کہ وہ اس کے وجود کے  گہرے بحر سے ٹکرانے کے بعد اسی کے سینے میں مد فن ہو جایا کرتی تھیں۔وہ تن تنہا ان تاریک راہوں میں بسنے والی عورتوں  کی سسکیوں کی پاسبانی کر رہا تھا جن سسکیوں…

پاکستان جھومر پارٹی

یہ پارٹی کسی تعارف کی محتاج نہیں،اور اگر تھی بھی تو اب محتاج نہیں رہے گی۔یہ پارٹی اپنی جن خصوصیات کی وجہ سے پوری دنیا میں جانی پہچانی جاتی ہے  وہ مختصر طور پر یہ  ہیں: اس پارٹی کے ارکان نہ صرف ‘سو میل’ دور سے چمکتےہوئے بوٹ دیکھ سکتے ہے  بلکہ غائبانہ طور پہ…

گھنٹیاں

سلیم احمد خان المعروف سیٹھ صاحب ہماری کمپنی کے مالک تھے۔   “سلیم  احمد خان” انکا والدین کی جانب سے  اور “سیٹھ صاحب” ہم ملازمین کی جانب سے رکھا گیا نام تھا۔ سیٹھ صاحب  میرے آئیڈئیل تھے۔ خوش لباس،  منطم، نفیس ، معاملہ فہم اور عقاب کی سی نگاہ رکھنے والا شخص۔کاغذوں کے ڈھیر میں اس…

آپ بڑے ہو کر کیا بنیں گے؟

میں ایک پرائمری اسکول ٹیچر ہوں ۔ ہمارے گورنمنٹ پرائمری اسکول مواچھ گوٹھ میں آج اُردو کا پرچہ تھا ۔ میری ڈیوٹی پانچویں جماعت یعنی جماعت پنجم کے طلبہ پر تھی ۔ جماعت پنجم کو برآمدے میں جگہ ملی تھی ۔ میں احتیاطی تدبیر کے طور پر برآمدے کے ایک ایسے کونے میں کھڑا تھا…

حقیقت کے اندھیروں میں ممکنات کے جگنو

سوانح عمری سے بڑھ کرمجھے ادب کی کوئی  صنف عزیزنہیں ۔  سوانح عمری عموماً ایک ایسے انسان کی ہوتی ہے جو  عملی طور پر کچھ کرنا جانتا ہے،   تاریخ بنانے کا ہنر جانتا ہے۔ کسی کو Inspire یا Motivate کر سکتا    ہے۔ دنیا میں بہت سے انسان ایسے ہیں جن کی زندگی کا کوئی ایک…

ضمیر

نیم اندھیرے کمرے میں، ساکت لمحوں میں موجود جلتے ہوئے،ساکت فضا میں معلق مدھم بلب کی ٹمٹماتی روشنی میں لکھ لکھ کر اس عمر رسیدہ بوڑھے کے لاغر، استخوانی اور رعشہ زدہ ہاتھ دُکھے جاتے ہیں لیکن کیا کرے کہ اس کا یہ لکھنا اب اس کی آخری ہچکیاں لیتی نیم مردہ سانسوں کی روانی…

ذمہ داریاں

یاور کے چائے ختم کرتے ہی میں نے اسے شیخ محی الدین العربی کے اس اقتباس سے نوازا، ’’الحق المحسوس والخلق المعقول‘‘، آؤ یاور صاحب، آج اس پر بحث کرتے ہیں،‘ وہ توجہ سے سن رہا تھا، میں نے ساتھ ہی ترجمہ بھی داغ دیا، ’وجودِ برحق یعنی Abstract کو ہم محض محسوس کر سکتے…

سوچ کی ہانڈی – لفظوں کا بگھار

میں اسکی بات سن کر مسکرا دیا۔ وہ گویا مجھے سمجھا رہا تھا۔ ۔نہیں میرا مسکرانا اس بات پر نہیں تھا کہ وہ  چھوٹا ہو کر بڑے بھائی کو سمجھا رہا تھا بلکہ اس کے انداز پر تھا۔ اس کی سوچ توآخر میرے ہی معاشرے کی عکاس تھی۔  وہ مجھے بتا رہا تھا کہ لکھو…

پسینہ

وہ اچھلتی کودتی ہاتھ میں موجود اماں کے دیئے پیسوں سے کھیلتی ہوئی گھر سے نکلی تھی پھر محلے میں رک کر اپنی سہیلیوں کے ساتھ بیٹھ کر مٹی کے کھلونے بنانے میں مگن ہو گئی کہ اچانک کھلونے بناتے ہوئے اسے خیال آیا کہ وہ تو گھر سے روٹیاں  لینے نکلی تھی۔ گرمی کی…

123
Got It!

اس ویب سائٹ کا مواد بول پلاٹون کی آفیشل رائے کی عکاسی نہیں کرتا. مضامین میں ظاہر معلومات اور خیالات کی ذمہ داری مکمل طور پر اس کے مصنف کی ہے